امریکی فوجی11ستمبر تک افغانستان سے چلے جائیں گے

انخلا اب 2001 میں امریکہ میں ورلڈ ٹریڈ سینٹر اور پینٹاگون پر ہونے والے دہشت گرد حملوں کے 20 برس مکمل ہونے پر ہوگا

امریکی حکام نے میڈیا کو بتایا ہے کہ امریکی صدر جو بائیڈن اعلان کرنے والے ہیں کہ امریکی فوجی 11 ستمبر تک افغانستان سے چلے جائیں گے۔گذشتہ سال ٹرمپ انتظامیہ اور طالبان کے درمیان معاہدے کے مطابق انخلا کے لیے طے کی گئی مئی کی تاریخ میں اب تاخیر ہو جائے گی۔

انخلا اب سنہ 2001 میں امریکہ میں ورلڈ ٹریڈ سینٹر اور پینٹاگون پر ہونے والے دہشت گرد حملوں کے 20 برس مکمل ہونے پر ہوگا۔

اس سے پہلے صدر بائیڈن کہہ چکے ہیں کہ یکم مئی کی ڈیڈ لائن کو پورا کرنا مشکل ہوگا۔فروری 2020 میں طے پانے والے معاہدے میں یہ طے ہوا تھا کہ اگر طالبان اپنے وعدے پورے کرتے ہیں تو امریکہ اور اس کے تمام اتحادی فوجی 14 مہینوں میں انخلا کر جائیں گے۔ ان وعدوں میں یہ بھی شامل ہے کہ طالبان اپنے زیرِ قبضہ علاقے القاعدہ یا کسی بھی اور شدت پسند گروہ کو استعمال کرنے نہیں دیں گے اور قومی امن مذاکرات کو جاری رکھیں گے۔

اگرچہ طالبان نے تاریحی معاہدے کے تحت بین الاقوامی فوجیوں پر حملے بند کر دیے تھے، لیکن پھر بھی انھوں نے افغان حکومت کے خلاف جنگ جاری رکھی ہوئی ہے۔اس طرح کے خدشات کا بھی اظہار کیا جا رہا ہے کہ اگر غیر ملکی فوجی طاقتیں بغیر کسی دیرپا معاہدے کے افغانستان سے نکل گیئں تو طالبان اقتدار پر قبضہ کر لیں گے۔

امریکہ کا کہنا ہے کہ افغانستان میں اب بھی اس کے تقریباً 25 ہزار فوجی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

x

Check Also

دبئی مینا بازار, dubai mena bazar

دبئی:مینا بازار میں ابوماجد فروٹ اینڈ ویجی ٹیبل کی تیسری برانچ کا افتتاح

دبئی(نمائندہ خصوصی)دبئی میں پاکستانی کاروباری حضرات قدم جمانے لگے۔مینا بازار میں سبزی اور فروٹ مارکیٹ ...

%d bloggers like this: